alwatantimes
Image default
بہار

مدارس اوردینی اداروں کو خیراتی تصورسے باہر لائیں :حضرت امیر شریعت

سہرسہ:مدارس اسلامیہ اوردینی وملی ادارے ملت کی امانت ہیں، اس کی تعمیر وترقی اورملک میں اس کی بقاء وتحفظ ہرمسلمان کی ایمانی ذمہ داری ہے، لیکن قابل افسوس ہے کہ مسلمانوں نے تمام مدارس اوردینی وملی اداروں کو خیرات وصدقات کے ڈور میں باندھ دیاہے، ہمیں سمجھناچاہئے کہ مدارس اورملی اداروں کو خیراتی تصورسے باہر نکالناوقت کی اہم ضرورت ہے، اس سے مدارس کانظام باوقار وپرکشش بنے گا،اورملی اداوروں کے کام آگے بڑھیں گے، لازم ہے کہ ہرمسلمان عہد کرے کہ وہ ان اداروں کی ترقی اور اس کی عظمت نو کی بحالی کے لئے زکوۃ وصدقات کے علاوہ اپنے عطیات کی رقوم بھی دینی اداروں پر خرچ کریں گے اورجب بھی ضرورت پڑے گی تو پوری فراخدلی کے ساتھ ان اداروں کے قیام اوراس کے نظام کے استحکام میں حصہ لیں گے، امارت شرعیہ جیسے ادارے آپ کی عظمت کی روشن علامت اوردین کا مستحکم قلعہ ہیں، اس وقت اس کے کام کافی تیزی سے پھیل رہے ہیں، جس میں ہرجہت سے آپ کا تعاون از حد ضروری ہے، ان خیالات کا اظہار امارت شرعیہ کے امیر شریعت مفکرملت حضر ت مولانا احمد ولی فیصل رحمانی مدظلہ نے جامع مسجد میر ٹولہ سہرسہ میں منعقد ایک عظیم الشان استقبالیہ اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے کیا، آپ نے فرمایاکہ جہاں جہاں میرے استقبال میں جلسے ہوئے ہیں ہرجگہ یاتو دینی مکتب کا قیام عمل میں آیا ہے یا دارالقضاء کا افتتاح اوراس کی زمین کا مسئلہ حل ہوا ہے، یاکوئی ملی کام انجام پایاہے،میں آپ سب کو بھی تاکید کرتاہوں کہ بامقصد جلسے کریں،یہاں سہرسہ میں بھی اس موقع پر دارالقضاء کی عمارت میں ایک ہیلتھ سنٹر کا افتتاح ہورہاہے، جو یہاں کے لوگوں کے لئے یقینا بڑی نعمت ہے، حضرت امیر شریعت مدظلہ نے حاضرین کو تلقین کی کہ وہ آپس کی نااتفاقی اوردل کی کدورتوں کو ختم کریں، آپ نے چند منٹ خاموش رہ کر لوگوں سے کہاکہ ہرمسلمان اس خاموشی کے وقفہ میں اپنے دل کو صاف کرلے، آپ نے فرمایاکہ ایک مسلمان کے دل کی عظمت اللہ کے نزدیک خانہ کعبہ سے بھی زیادہ ہے، اس لئے دلوں کو صاف رکھیں، اورمتحد ہوکر زندگی گذاریں،آپ خوش نصیب ہیں کہ ضلع سہرسہ میں پنچایت،بلاک اورضلع سطح پر تنظیم امارت شرعیہ قائم ہے،امارت شرعیہ کی تنظیم ہمیشہ کلمہ واحدہ کی بنیاد پر قائم ہوئی ہے، ہر کلمہ پڑھنے والا امارت شرعیہ کی تنظیم کا حصہ ہے، اورکلمہ ہی مسلمانوں کے اتحاد کی سب سے مضبوط بنیاد ہے، امید کہ آپ حضرات اس تنظیمی ڈھانچہ کو مضبوط اورموثربنائیں گے، آپ نے اپنے خطاب میں فکر آخرت پر بھی زور دیا اورکہاکہ موت ہم سب کے سامنے کھڑی ہے، آپ اس سوچ کے ساتھ قدم آگے برھائیں کہ اگر کسی وقت بھی موت آجائے تو ہمارے پاس ایسے اعمال موجود ہوں جس سے دنیا میں بھی لوگ عزت سے آپ کا نام لیں اورآخرت میں بھی آپ سرخروہوں، حضرت امیر شریعت کی آمد سے پورے شہر سہرسہ میں ایک جشن کا ماحول ہے، لوگوں نے پھول اورگلدستوں سے راستوں اورچوراہوں پر حضرت کا والہانہ استقبال کیا، جناب ڈاکٹر ابوالکلام نے حضرت امیر شریعت کی شال پوشی کی اورسپاش نامہ پیش کیا، پورے ضلع سے خواص کی آمد نے مسجدکے تمام حصوں کو پر کررکھاتھا، اس موقع پرخطاب کرتے ہوئے قاضی شریعت مولانامفتی انظارعالم قاسمی صاحب نے حضرت امیر شریعت کی اطاعت پر زور دیا اورکہاکہ استقبال کا حق نعروں سے نہیں بلکہ عملی اطاعت ہی سے ادا ہوسکتاہے، مفتی امارت شرعیہ جناب مولانا سعیدالرحمن قاسمی صاحب نے اطاعت امیر کی شرعی حیثیت پر روشنی ڈالی اورکہاکہ امارت شرعیہ صرف ادارہ نہیں ہمارے ایمان وعقیدہ کا حصہ ہے، نائب ناظم امارت شرعیہ مولانا مفتی محمد سہراب ندوی صاحب نے حضرت امیر شریعت کے نگاہ بلنداورفکر ارجمند پر گفتگو کرتے ہوئے آپسی اتحاد کے استحکام،دینی مکاتب کے قیام اورمعیاری عصری اسکول کے نظام پر فوری توجہ دینے کی گذارش کی، اورکہاکہ تعلیم گاہیں انسانی سماج کے لئے دل اوردماغ کی حیثیت رکھتی ہیں،ہمیں ترقی اورعظمت دونوں چیزیں صرف اسی راہ سے نصیب ہوسکتی ہیں، اجلاس کو مولانا محب الحق قاسمی صاحب، قاضی شریعت للجہ مولانا اظہارالحق صاحب، قاضی شریعت سہرسہ مولانا یوسف صاحب نے بھی خطاب کیا، جناب مولانا شمیم اکرم رحمانی صاحب نے نظامت کی ذمہ داری سنبھالی، تنظیم امارت شرعیہ سہرسہ کے ضلع صدر جناب طاہر صاحب،ضلع سکریٹری ڈاکٹر طارق نے بھی شکریہ کے کلمات کہے، سابق ایم ایل اے جناب ظفر صاحب،جناب اظہار عالم صاحب وغیرہ نے علماء کرام کو شال پیش کئے۔اس اجلاس کو کامیاب اوربامقصد بنانے میں ضلع سہرسہ کے علماء،ائمہ،مدارس کے ذمہ داران،شہر کے نوجوانوں اور ضلع تنظیم کے ذمہ داران وارکان نے نمایاں رول اداکیا،خوشی ہے کہ عصر کی نماز کے بعد حضرت امیر شریعت مدظلہ کے ہاتھوں دارالقضاء سہرسہ کی عمارت میں امارت ہیلتھ کلنک کا افتتاح ہوا، جس میں شہرکے ڈاکٹروں نے فری وقت دینے اور غریبوں،ضرورتمندوں کو آسان علاج فراہم کرنے کا فیصلہ کیا۔

Related posts

صحافی خورشید انور عارفی کے انتقال دانشوران کا اظہار تعزیت

alwatantimes

وزیر اعلیٰ نے بجلی محکمہ کی جائزہ میٹنگ کی

alwatantimes

قیمتیں بڑھنے سے لوگوں کے مسائل کچھ بڑھ جاتے ہیں:نتیش

alwatantimes

Leave a Comment